Latest

بھارتی سپریم کورٹ میں معروف سرمایہ کار کا منہ سیاہی سے کالا کردیا گیا

بھارتی سپریم کورٹ میں معروف سرمایہ کار کا منہ سیاہی سے کالا کردیا گیا
کراچی (رپورٹ جاوید رشید) ایک بڑے بھارتی گروپ چیئرمین سبرت رائے کی نظر بندی کے خلاف درخواست ضمانت منگل کے روز بھارتی سپریم کورٹ نے مسترد کردی، عدالت میں پیشی کے موقع پر ایک خاتون سرمایہ کار نے ان کے منہ پر سیاہی پھینک کر کالا کردیا ۔ سبرت رائےپر انویسٹرز کے 00 32کروڑ روپے ہضم کرنے کا الزام ہے۔کی گرفتاری کے فوری بعد اگلے روز سبرت رائے کے وکیل نامور قانون دان رام چیٹھ ملانی نے ان کی ضمانت کے لیےدرخواست کی تھی ۔ منگل کے روز سپریم کورٹ آف انڈیا میں سبرت رائے کی پیشی تھی سبرت رائے منگل کے روز عدالت میں پیش ہوئے تو ان کی سرمایہ کار کمپنی کے سیکڑوں انویسٹرز عدالت کے احاطہ میں موجود تھے خواتین انویسٹرز نے سبرت رائے کے منہ پر سیاہی پھینک دی جس سے رائے کا منہ کالا ہوگیا ۔ سبرت رائے کے وکیل نے عدالت کو بتایا ہے کہ ان کے موکل پر 32 سو کروڑ کے روپیہ ہضم کرنے کا الزام جھوٹا ہے۔ سبرت رائے نے انویسٹرز کی رقم کو ہضم نہیں کی ہے صرف منافع رک گیا تھااور مئی 2014ء سے یہ پرافٹ دوبارہ سے شروع ہوجائے گا۔ راجہ جیٹھ ملانی نے جنگ کو بتایا کہ گروپ ایک ٹیکس دینے والا بڑا ادارہ ہے کاروبار میں نفع نقصان ہوتا رہتا ہے گروپ اپنے کسی انویسٹرکا سرمایہ کھانے کی نیت نہیں رکھتاہے۔ رام جیٹھ ملانی نے یہ کہا ہے کہ سبرت رائے کی کمپنی ان سرمایہ کاروں کو جو اپنی رقم واپس لینا چاہتے ہیں دو ماہ کے اندر واپس کردے گی۔