Latest

طالبان سے مذاکرات، 3آپشنز پر غور، آج اہم فیصلے متوقع

طالبان سے مذاکرات، 3آپشنز پر غور، آج اہم فیصلے متوقع
اسلام آباد(طاہر خلیل) وزیراعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس میں مذاکراتی کمیٹیوں کے مستقبل کا فیصلہ ہوگا اسلام آباد میں باخبر حلقوں کا کہنا ہے کہ پرائم منسٹر ہائوس میں آج طالبان سے مذاکرات کے معاملے پر 3آپشنز پر غور کے بعد اہم فیصلے متوقع ہے پہلا آپشن یہ ہے کہ مذاکراتی کمیٹیوں کا دائرہ کار وسیع کیا جائے، مذاکراتی کمیٹیوں میں مقتدر قوتوں کو بھی شامل کردیا جائے، موجودہ مذاکراتی کمیٹیاں تحلیل کرکے ایک نئی کمیٹی قائم کردی جائے ذرائع نے کہا کہ آج کے اجلاس میں ایک اہم سوال یہ زیر غور آئے گا کہ ڈائیلاگ ٹو کا لائحہ عمل کیا ہونا چاہیے؟ کیونکہ اب معاملات رابطہ کاری سے نکل کر فیصلہ سازی کے مرحلے میں داخل ہوگئے ہیں ڈائیلاگ II کے اس مرحلے میں طالبان قیدیوں کی رہائی، فاٹا سے فوج کی واپسی، طالبان کو معمول کی زندگی گزارنے کے مواقع کی فراہمی اور شدت پسندوں کے ہتھیار ڈالنے کے چار اہم امور پر فیصلے ہوں گے، ڈائیلاگ ll میں سکیورٹی فورسز پر اب بھی حملے ہونے کا سوال اٹھایا جائے گا، اسلام آباد اور دیگر شہروں میں شدت پسند پہلے کی طرح دھماکے کرکے اپنی تشدد آمیز سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں اور تحریک طالبان تشدد آمیز کارروائیاں روکنے کےلیے کیا اقدامات کررہی ہے۔ حکومتی کمیٹی کے سربراہ عرفان صدیقی سے جب نمائندہ جنگ نے سوال کیا کہ فوج کو مذاکراتی عمل میں شامل کرنے کے فیصلے پر کب عمل درآمد ہوگا تو عرفان صدیقی نے استفسار کیا کہ فوج کب مذاکراتی عمل میں شامل نہیں تھی؟ وزیراعظم کی آرمی چیف سے ملاقاتیں اسی سلسلے کا حصہ تھیں فوج کو مذاکراتی عمل میں پوری طرح آن بورڈ کیا گیا۔