Latest

پاکستان کی یادگار فتح ،دہشت گردی کی فضا میںقوم خوشیوں سے جھوم اٹھی

پاکستان کی یادگار فتح ،دہشت گردی کی فضا میںقوم خوشیوں سے جھوم اٹھی
کراچی (ٹی وی رپورٹ)جیو کے پروگرام ’’آج کامران خان کے ساتھ‘‘ میں پاکستان کی بنگلہ دیش کے خلاف یادگار فتح پر تجزیہ کرتے ہوئے میزبان کامران خان نے کہا کہ دہشتگردی کی بدترین فضا کے باوجود پچھلے تین روز سے پاکستانی جتنے خوش ہیں اس سے پہلے شاید ہی کبھی ہوئے ہوں، آج کراچی سے لے کر خیبر اور قبائلی علاقوں تک پاکستانی خوشیوں سے جھوم رہے ہیں، وہ سب کچھ بھول چکے ہیں اور شادمان نظر آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر پاکستانی کرکٹ ٹیم میں جذبہ جنوں نہ ہوتا تو پاکستان کیسے بنگلہ دیش کے 326 رنز کے ہدف کو حاصل کرتا اور تاریخی فتح حاصل کرتا، اگر پاکستان نے ہمت ہاری ہوتی تو کیسے بھارت کو ایک عبرتناک شکست دیتا جب آخری اوور کی مسلسل دو گیندوں پر شاہد آفریدی نے چھکے مارے اور بھارت کے کرکٹ کے غرور کو خاک میں ملادیا، منگل کو یہی کچھ بنگلہ دیش کے ساتھ بھی ہوا جس کا کرکٹ غرور اور بھارت کے ساتھ قربت پاکستان کے لئے کوئی اچھا پیغام نہیں تھی لیکن شاید بنگلہ دیش کو آج اسی غرور کی سزا ملی جب وہ تاریخ میں پہلی بار پاکستان کے خلاف ون ڈے میں 326 رنز بنانے کے باوجود شکست کھا گیا۔ کامران خان نے کہا کہ دہشتگردی کے اس خطرناک ماحول کے باوجود پاکستانیوں کی ہمت میں کہیں جنبش نظر نہیں آرہی، پاکستانیوں کی ہمت کرکٹ کے علاوہ بھی نظر آرہی ہے جس کا ثبوت آج اسٹاک مارکیٹ میں 365 پوائنٹس کا اضافہ ہے جو پاکستانی اور غیرملکی سرمایہ کاروں کے پاکستانی معیشت پر اعتماد کا اظہار ہے، حالیہ مہینوں کے دوران پاکستانیوں نے غیرممالک سے ریکارڈ زرمبادلہ پاکستان بھیج کر پاکستان پر اعتماد کا اظہار کیا ہے یہی وجہ ہے کہ پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر گرتے نظر نہیں آرہے ہیں۔ کامران خان نے مزید کہا کہ یہ بھی یاد رہے کہ اس ٹورنامنٹ کے دوران پاکستان کیلئے ماحول سازگار نہیں تھا، بنگلہ دیش میں پاکستان کیلئے ماحول کچھ بہت زیادہ سا زگار نہیں ہے، ایک طرف بنگلہ دیشی حکومت پاکستان مخالف کردار ہے اور دوسری جانب بھارت کیلئے بنگلہ دیش میں ماحول سازگار ہے،لیکن اس غیرموافق صورتحال کے باوجود پاکستان جیتا۔ انہوں نے کہا کہ سب سے بڑی وجہ جو پاکستان کے خلاف ہوئی اور ایسا لگا کہ شاید تمام قوتیں جن کا کرکٹ کی دنیا میں بگ تھری نام ہے ان کی خواہش یہ تھی کہ پاکستان بہت زیادہ چمک نہ پائے لیکن خدا کی ذات بھی ہوتی ہے اور پاکستانیوں کی دعائیں بھی تھیں۔ امپائرز نے پاکستان کیخلاف جو فیصلے دیئے اس پر کرکٹ کے شائقین ششدر رہ گئے لیکن اس کے باوجود پاکستان کو شکست نہ ہوسکی۔