Latest

کالعدم تنظیم کے ہلاک ہونے والے ٹارگٹ کلرز کے بارے میں اہم انکشافات

کالعدم تنظیم کے ہلاک ہونے والے ٹارگٹ کلرز کے بارے میں اہم انکشافات
کراچی(اسٹاف رپورٹر) ڈی آئی جی ویسٹ جاوید عالم اوڈھو نے پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے کالعدم سپاہ محمد کے دوٹارگٹ کلرز کے بارے اہم انکشافات کیے ہیں ٹارگٹ کلر محمد علی عرف، ثمر بنگش عرف ثمر عباس اور باقر عر رضا بلو نے پولیس افسران واہلکاروں ، مذہبی، وسیاسی جماعتوں کے عہدیداروں اور کارکنان سمیت 50سے زائد افراد کو قتل اور درجنوں افراد کو زخمی کیا جبکہ ایک نیوز چینل پر دوبار دستی بم سے حملے کیے تھے، ڈی آئی جی جاوید عالم اوڈھو کا کہنا ہے کہ انکے قبضے سے ملنے والے اسلحے اور خول جو پولیس نے فرانزک لیبارٹری بھیجے تھے اسکی رپورٹ کے مطابق اس ہی اسلحے سے متعدد افراد قتل ہوئے ہیں۔ یہ بات انہوں نے بدھ کو پریس کانفرنس میں کہی اس موقع پر ایس ایس پی سینٹرل مقدس رضا موجود تھے، انہوں نے کہا کہ ہلاک ہونے والے دہشت گرد باقر اور ثمر عباس کالعدم سپاہ محمد کےلیے کام کرتے تھےاور انہوں نے ایران سے ٹریننگ حاصل کی۔ اس قبل یہ ایک سیاسی تنظیم کےلیے کام کرتے تھےان کے نام جب ظاہر ہوئے تو تنظیم نے انہیں تنظیم سے فارغ کردیا، انہوں نے کہا کہ باقر اور ثمر عباس نے رضویہ میں عابد فاروق، متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن حامد اور علی، مولانا عثمان یار خان، پولیس اہلکار سہیل، فخر والدین، شاہد، عامر، شبیر، قاضی عالم، جاوید، اے ایس آئی خورشید، اہلکار علی احمد، اے ایس آئی جمال، راحت، صادق سمیت 50سے زائد افراد کو قتل کیا، جبکہ19مارچ کو فیڈرل بی ایریا بلاک نمبر16عبداللہ سینٹر میں سہیل کو زخمی کیا تھا، جبکہ بلوچ کالونی کے علاقے میں قائم مقامی چینل کے دفتر پر دوبار دستی اور کریکر بم سے حملے کیے جس میں متعدد افراد زخمی ہوئے تھے۔


کالعدم تنظیم کے ہلاک ہونے والے ٹارگٹ کلرز کے بارے میں اہم انکشافات

کالعدم تنظیم کے ہلاک ہونے والے ٹارگٹ کلرز کے بارے میں اہم انکشافات
کراچی(اسٹاف رپورٹر) ڈی آئی جی ویسٹ جاوید عالم اوڈھو نے پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے کالعدم سپاہ محمد کے دوٹارگٹ کلرز کے بارے اہم انکشافات کیے ہیں ٹارگٹ کلر محمد علی عرف، ثمر بنگش عرف ثمر عباس اور باقر عر رضا بلو نے پولیس افسران واہلکاروں ، مذہبی، وسیاسی جماعتوں کے عہدیداروں اور کارکنان سمیت 50سے زائد افراد کو قتل اور درجنوں افراد کو زخمی کیا جبکہ ایک نیوز چینل پر دوبار دستی بم سے حملے کیے تھے، ڈی آئی جی جاوید عالم اوڈھو کا کہنا ہے کہ انکے قبضے سے ملنے والے اسلحے اور خول جو پولیس نے فرانزک لیبارٹری بھیجے تھے اسکی رپورٹ کے مطابق اس ہی اسلحے سے متعدد افراد قتل ہوئے ہیں۔ یہ بات انہوں نے بدھ کو پریس کانفرنس میں کہی اس موقع پر ایس ایس پی سینٹرل مقدس رضا موجود تھے، انہوں نے کہا کہ ہلاک ہونے والے دہشت گرد باقر اور ثمر عباس کالعدم سپاہ محمد کےلیے کام کرتے تھےاور انہوں نے ایران سے ٹریننگ حاصل کی۔ اس قبل یہ ایک سیاسی تنظیم کےلیے کام کرتے تھےان کے نام جب ظاہر ہوئے تو تنظیم نے انہیں تنظیم سے فارغ کردیا، انہوں نے کہا کہ باقر اور ثمر عباس نے رضویہ میں عابد فاروق، متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن حامد اور علی، مولانا عثمان یار خان، پولیس اہلکار سہیل، فخر والدین، شاہد، عامر، شبیر، قاضی عالم، جاوید، اے ایس آئی خورشید، اہلکار علی احمد، اے ایس آئی جمال، راحت، صادق سمیت 50سے زائد افراد کو قتل کیا، جبکہ19مارچ کو فیڈرل بی ایریا بلاک نمبر16عبداللہ سینٹر میں سہیل کو زخمی کیا تھا، جبکہ بلوچ کالونی کے علاقے میں قائم مقامی چینل کے دفتر پر دوبار دستی اور کریکر بم سے حملے کیے جس میں متعدد افراد زخمی ہوئے تھے۔