Latest

کرم ایجنسی میں ایف سی کے قافلے پر ریمورٹ کنٹرول بم حملہ، 6 اہلکار شہید، 8 زخمی

کرم ایجنسی میں ایف سی کے قافلے پر ریمورٹ کنٹرول بم حملہ، 6 اہلکار شہید، 8 زخمی
پشاور،اسلام آباد (نمائندہ جنگ ،نیوز ایجنسیاں) قبائلی علاقے کرم ایجنسی میں ایف سی کے قافلے پر ہونے والے ریموٹ کنٹرول بم حملے میں کم سے کم 6اہلکار شہید اور 8زخمی ہوگئے ہیں جبکہ کالعدم انصار المجاہدین کے ترجمان ابو بصیر نے کرم ایجنسی میں سکیورٹی قافلے پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایف سی پر حملہ کر کے ڈرون حملوں سے ہزاروں قبائلیوں کی موت کا بدلہ لیاہےادھرجمرود میں دو افراد کی لاشیں ملی ہیں دونوں کو گولیاں مار کر قتل کیا گیا،پشاور میں پولیس چوکی کے قریب فائرنگ کے نتیجے میں پولیس اہلکار جاں بحق ہو گیا۔تفصیلات کے مطابق کرم ایجنسی میں سکیورٹی فورسز کا قافلہ ہنگو سےمناتو جا رہا تھا کہ ورمیگی کے مقام پر اسے ریموٹ کنٹرول ڈیوائس کی مدد سے نشانہ بنایا گیا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق بدھ کی صبح سکیورٹی فورسز کا ایک قافلہ ہنگو سے کرم ایجنسی کے علاقےمناتو جارہا تھا کہ ورمیگی کے علاقے میں ان کی ایک گاڑی کو ریموٹ کنٹرول بم حملے کا نشانہ بنایا گیا۔حملے میں 4اہلکارشہید اور 10زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو ٹل شہر منتقل کیا گیا ہے جہاں مزید دو زخمی اہلکار دم توڑ گئے۔ بتایا گیا ہے کہ مرنے والے اہلکاروں کا تعلق فرنٹیئر کور سے ہے۔سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے حملے کے بعد علاقے کا محاصرہ کرکے دہشت گردوں کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مار کارروائیاں شروع کر دی ہیں۔ ادھر پشاور وزیر باغ میں پولیس چوکی کے قریب مسلح افراد کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار جاں بحق ہوگیا۔پولیس اہلکار کی شناخت ابن الحسن کے نام سے ہوئی جو کہ گھر سے نکل کر ڈیوٹی پر جارہا تھا اور اسے راستے میں قتل کردیا گیا پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کردیا۔دریں اثناء خیبرایجنسی کی تحصیل جمرود میں د وافراد کی لاشیں ملی ہیں۔ خاصہ دار فورس کے مطابق تحصیل جمرود کے علاقے غڑیزہ سے دو افراد کی لاشیں ملی ہیں۔ دو نوں افراد کو گولیاں مارکر قتل کیا گیا‘ مرنیوالے پرویز اور بہار علی کا تعلق پشاور سے ہے۔ مقتولین کی لاشیں اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ کے دفتر منتقل کردی گئیں‘فوری طور پر قتل کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے ۔ادھرکالعدم انصار المجاہدین نے ہنگو میں سکیورٹی قافلے پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایف سی پر حملہ کر کے ڈرون حملوں سے ہزاروں قبائلیوں کی موت کا بدلہ لیاہے۔ بدھ کو کالعدم انصار المجاہدین کے ترجمان ابو بصیر نے ہنگو میں سکیورٹی فورسز کے قافلے پر ریموٹ کنٹرول بم حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ ایف سی کی گاڑی پر حملہ ہم نے کیا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ ڈرون حملوں سے ہزاروں قبائلیوں کی موت واقع ہوئی، جس کا بدلہ ہم نے سکیورٹی فورسز پر حملہ کر کے لیا ہے۔