Latest

ہزاروں قر بتوں پر یوں مرا مہجور ہو جانا

ہزاروں قر بتوں پر یوں مرا مہجور ہو جانا
جہاں سے چاہتا ان کا وہیں سے دور ہو جانا
ان آنکھوں کا نہ پوچھو ضبط،جن آنکھوں نے دیکھا ہے
سحر ہونے سے پہلے شمع کا بے نور ہو جانا
محبت کیا ہے، تاثیرِ محبت کس کو کہتے ہیں
ترا مجبور کر دینا ،  مرا مجبور ہو جا نا
مگر اس رمز سے نا آشنا تھے حضرت موسٰیؑ
کہ ہے ننگِ نظر پا بندِ برق وطورہو جانا
جگر وہ حُسنِ یکسو ئی کا منظر یاد ہے ابتک
نگا ہوں کا سمٹنا  اور  ہجوم نور ہو جا نا
  جگرؔ  مراد آبادی