Latest

عرش سے ہو کے جومایوس دعائیں آئیں

عرش سے ہو کے جومایوس دعائیں آئیں
میں یہ سمجھا کہ مرے گھر میں بلائیں آئے
 کیجئے اور کوئی ظلم، اگر ضد ہے یہی
لیجئے اور مرے لب پہ دعائیں آئیں
مدتوں یاد دلایا گیا افسانہء غم
دل اگر خاک ہوا ، دل کی صدائیں آئیں
کسی بیکس کا پڑا صبر کسی پر شائد
آج اس سمت سے ناساز ہوائیں آئیں
اُف نہ پوچھو، شب غم سے لے کر تا صبح
کیا بھیا نک مرے کا نوں میں صدا ئیں آئیں
میں نے جب مر حلہ ء عشق کیا ختم  جگرؔ
مرحبا کی مرے کانوں میں صدائیں آئیں
   جگرؔ  مراد آبادی